.....................
Download WordPress Themes, Happy Birthday Wishes
HTV Pakistan
بنیادی صفحہ » سچی کہانیاں » کالا جادو اور عوام

کالا جادو اور عوام

پڑھنے کا وقت: 10 منٹ

 منصور مہدی ……

کالاجادو او رٹونا کرنے والوں نے صوبائی دارلحکومت میں ہزاروں کی تعداد میں ڈیرے بنا لیے جعلی عاملوں اور جادوگروں نے اپنے جادو ٹونے اور موکلوں کے زور پر ایک خوفناک عفریت کی شکل اختیار کر لی اور آکٹوپس کی مانند معصوم لوگوں کو اپنے شکنجے میں جکڑ کر نہ صرف انھیں لوٹنا شروع کر دیا بلکہ مخالفین سے بھاری رقوم لے کر کالے جادو اور زہریلے تعویزوں کے ذریعے لوگوںکے گھر برباد کرناشروع کر دیے معاشی اور سماجی بے چینیوں میں مبتلا لوگ روزی اور روٹی کی طلب میں ان باتونی اور چالباز عاملوں کی باتوں میں آ کر نہ صرف حقیقت کی دنیا سے دور ہو جاتے ہیں بلکہ اپنا دین اور ایمان بھی گنواءدیتے ہیں جبکہ خواتین اپنی عزتوں سے ہاتھ دھو بیٹھی ہیں ۔دیکھتی آنکھوں اس ہونے والے ظلم اور زیادتی کے خلاف نہ کبھی کسی مذہبی یا سماجی تنظیم نے ان لوگوں کے خلاف آواز بلند کی اور نہ ہی کسی سرکاری ادارے نے ان کے خلاف کاروائی کی۔گڑھی شاہو میں عامل قادری باوا نامی ایک عامل نے جادو کے ذریعے واپڈا کے ملازم کو محکمانہ ترقی دلوانے کا جھانسہ دیکر ایک لاکھ باسٹھ ہزار روپے سے محروم کر دیا اور واپسی کا تقاضہ کرنے پر سنگین نتائج کی دھمکیاں دینی شروع کردی ۔پولیس سے رجوع کرنے پر پولیس نے بھی جھوٹے عامل کے خلاف کاروائی کرنے سے انکار کر دیا۔

نشاط کالونی کینٹ کا رہائشی واپڈا کا سب انجینئر محمد یوسف اپنی محکمانہ ترقی کا منتظر تھا مگر اسے کوئی راہ نہیں دکھائی دے رہی تھی چنانچہ اس نے کسی شخص سے سنا کہ تاج سنیما کے قریب عامل قادری باوا نامی ایک عامل ہے جو اپنے علم کے ذریعے ہر کام چند دنوں میں کروا دیتا ہے چنانچہ محمد یوسف بھی اپنی دلی مراد لیکر اس کے ٹھکانے پر پہنچ گیا ۔عامل باوا نے اپنی چکنی چپڑی باتوں سے محمد یوسف کو اپنے جال میںپھنسا لیا اور اس سے وقتاً فوقتاً ایک لاکھ باسٹھ ہزار روپے لے لیے اور وعدہ کیا کہ صرف سات یوم میں کام ہو جائے گا وگرنہ رقم واپس کر دوں گا جس پر محمد یوسف نے اس سے رقم کی وصولی کی رسید بھی لے لی مگر ترقی نہ دلوا سکنے پر محمد یوسف نے اپنی رقم کی واپسی کا مطالبہ کیا مگر اس نے ٹال مٹول کرنا شروع کر دی چنانچہ محمد یوسف نے دیگر لوگوں کے ذریعے عامل سے اپنی رقم کی واپسی کا مطالبہ شروع کر دیا جس پر عامل نے 11مارچ کو 2004کو ایک اقرار نامہ بحق محمد یوسف تحریر کر دیا کہ 25مارچ تک وہ رقم واپس کر دے گا مگر اس نے حسب وعدہ رقم واپس نہ کی ۔آخر کار 14ہزار روپے اور دو عدد سونے کی چوڑیاں دیکر بقایا رقم دینے کا وعدہ کر لیا مگر رقم نہ دے سکا ۔اور محمد یوسف اور اس کے اہل خانہ کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دینی شروع کر دی جس پر محمد یوسف نے تھانہ قلعہ گجر سنگھ میں اس کے خلاف درخواست دی مگر پولیس نے عامل کے خلاف کسی بھی قسم کی کوئی کاروائی کرنے سے انکار کر دیا ۔

محمد یوسف کے بیٹے بشارت حسین کا کہنا ہے کہ جعلی عامل نے اپنی باتوں سے میرے والد کو ورغلا کر ان سے ایک لاکھ باسٹھ ہزار روپے بٹور لیے۔ جب ہم نے اس سے رقم کی واپسی کا مطالبہ کیا تو اس نے ہمیں مختلف غنڈوں سے دھمکیاں دینی شروع کر دی اور کہا کہ اگر اب رقم کی واپسی کا مطالبہ کیا تو جھوٹے مقدمات مین ملوث کروا دوں گا ۔ انھوں نے مزید بتایا کہ جعلی عامل جسکا اصل نام ندیم قادری ہے مگر اب سہیل قادری کے نام سے لوگوں کو لوٹ رہا ہے جبکہ باوا کہلاتا ہے۔ انھوں نے بتایا کہ جب پہلی مرتبہ اس کے پاس گیا تو مجھے کسی بھی طرح کوئی عامل نظر نہیں آیا بلکہ وہ ایک فراڈیا ہے جو لوگوں سے فراڈ کرتا ہے۔

سہیل احمد قادری عرف عامل قادری باوا نے بتایا کہ میری عمر اس وقت 24سال ہے اور میں 14سال کی عمر سے یہ کام کر رہا ہوں میرے والد اور دادا بھی یہی کام کرتے تھے۔ انھوں نے بتایا کہ محمد یوسف نامی شخص کے میں نے کوئی پیسے نہیں دینے بلکہ یہ میرے پاس جادو کے ذریعے اپنے کسی دشمن کو مروانے کے لئے آیا تھا جو میں نے انکار کر دیا جس پر یہ میرا دشمن بن گیا اور ایک دن یہ اپنے آدمیوں کے ساتھ آیا اور مجھے گن پوائینٹ پر اغوا کر کے لے گیا اور زبردستی مجھ سے ایک لاکھ باسٹھ ہزار روپے کی ادائیگی کا اشٹام پیپر مجھ سے دستخط کر وا لیا۔انھوں نے بتایا بعد میں پھر یہ لوگ آئے اور گن پوائینٹ پر میرے دفتر سے میرا موبائل اور دو عدد سونے کی چوڑیا ں بھی لے گئے تھے۔ انھوں نے بتایا کہ میں نے ان کے خلاف پولیس کو درخواست دی تھی مگر کوئی کاروائی نہیں ہوئی۔

تھانہ قلعہ گجر سنگھ سے معلوم کر نے پر پتہ چلا کہ کسی بھی پارٹی نے کبھی بھی کوئی درخواست نہیں دی ۔ڈیوٹی محرر نے بتایا کہ اگر کوئی ہمارے پاس درخواست لیکر آے گا تو ہم ضرور قانونی کاروائی کریں گے۔

لاہور شہر میں 5 ہزار سے زاہد افراد نے جادو ٹونے کرنے کے ڈیرے بنائے ہوئے ہیں جبکہ بہت سے لوگوں نے یہ دھندا اپنے گھروں پر شروع کیا ہوا ہے جادو کی تاریخ انسانی تاریخ کی مانند بہت قدیم ہے جادو ایک علم ہے جس کے ذریعے لوگوں کے دلوں میں وسوسے پیدا کر کے انھیں سیدھے راستے سے بھٹکایا جاتا ہے اور یہ کہنا غلط نہیں ہو گا کہ جادو کابانی ابلیس تھا جس نے انسانوں کے دلوں میں وسوسے ڈالے اور انہیں گمراہ کرنے کا چیلنج کیا تھا اور خدا نے اس کے وسوسوں سے بچنے کی تاکید کی تھی حضرت موسی ؑکے دور میں سامری جادو گر بہت مشہور تھا مگر حضرت موسیؑ کی خدائی طاقت اور ایمان کے سامنے اس کی تمام شعبدے بازیاں کام نہ کر سکیں ۔وقت کے ساتھ ساتھ جیسے حق کی قوتیں کام کرتی رہیں ویسے ہی بدی کی طاقتیں بھی اپنا اثرورسوخ بڑھاتی رہیں ،حق کے ماننے والے نوری علم سے جہاں پر لو گوں کے مسائل حل کرنے میں لگے ہوئے ہیںاور قرآن کی تعلیم کے ذریعے انہیں ذہنی آسودگی دیتے ہیں وہاں پر بدی کا ساتھ دینے والے شیطانی علوم سے عوام الناس کو مختلف مصائب میں مبتلا کرتے رہتے ہیں یہ لوگ نہ صرف کالے علم کی مختلف اقسام جیسے جنتر، منتر اور تنتر سے لوگوں کے دلوں میں وسوسے ڈال کر گمراہ کرتے ہیں بلکہ گندی روحوں ، موکلوں اور د یگر کالی شکتیوں جیسے ہنومان ،کھیترپال ،بھیرو، ناگ دیوتا ، لوناچماڑی، چڑیل، لکشمی دیوی ، کالا کلوا ، پاروتی دیوی ، کلوسادھن، پیچھل پیری ،ڈائن ،ہر بھنگ آکھپا جیسی دیگر بلاﺅں کے ذریعے لوگوں کے دلوں میں وسوسے ڈال کر ایک دوسرے کا مخالف بنا دیتے ہیں اور اس کے عوض ان سے ہزاروں روپے بٹورتے ہیں جبکہ بعض چالباز اور دولت کے پجاری عامل زہر سے لکھ کر تعویز دیتے ہیں جس کو گھول کر پینے والا نہ صرف مختلف قسم کی بیماریوں میں مبتلا ہو جاتا ہے بلکہ بسااوقات ہلاک ہو جاتا ہے اور بعض اوقات زہر کے اثر کی وجہ سے پاگل ہوجاتاہے اور بعض اوقات عالم دیوانگی میں خود کشی کر کے ہلاک ہوجاتا ہے ۔

7 تبصرے

  1. السلام علیکم
    آپ کے مضمون کو پڑھ کر لوگ مزید خوفزدہ ہو جائیں گے۔ یہ بات کہ فلاں شخص پر جادو ہوا ہےہمیں عامل ہی بتاتے ہیں۔ اگر ہم اس سلسلے میں تفتیش اور تحقیق اور تشخیص کا رخ کسی اور اہل علم کی جانب موڑیں اور دریافت کریں تو بالعموم وہ بھی اسے موضوع بناتے ہیں۔ میں ایک عاجز بندہ ہوں اور ہر وقت اللہ کی امان مانگتا ہوں۔ ابلیس کو یہ اختیار تو ہے کہ وہ مجھے شر کی دعوت دے مگر وہ کسی کو بھی مادی نقصان نہیں پہنچا سکتا۔ میں نے کالے علم والوں کو بارہا کہا کہ مجھ پر اپنا جادو آزمائیں تو وہ خاصی بے بسی محسوس کرتے ہیں۔ نوری علم بھی میرے نزدیک وہی جادو ہے جس سے منع فرمایا گیا ہے بس اس میں کرنے والے کی نیت درست ہوتی ہے اور کلمات کا انتخاب دینی مواد سے کیا جاتا ہے۔

  2. by reading your eassay people to some extent will understand that all these are frauds for graping money fraudly.
    so my message to all of you to be away from these frauders, and with hope pray for yourself, inshallah you will be soon come out your problems and will have success at your doorstep.
    Allah hafiz.

  3. جادو کچھ نہیں ہے۔ بس انسانی خیالات کی قوت کو جس طرف ارتکاز کر دیا جاے وہ جادو کا ہی کام دیں گی۔ کیونکہ اللہ نے انسان کو اشرف المخلوقات بنایا ہے اس لیے انسان کے جسم سے ایسی لہریں خارج ہوتی ہیں۔ جو ہر ذی روح پر اثر انداز ہوتی ہیں اس لیے جس کسی پر بھی یہ لہریں اپنا اثر ظاہر کرتی ہیں وہ سمجھتا ہے کے اس پر جادو کر دیا گیا ہے۔

  4. شبیر شاکر 548

    ان عاملوں کے خلاف حکومت کو کاروائ کرنی چاہے

  5. ڈبہ پیرو کے خلاف حکومت کاروائ کرے
    کاش ایسا ھو

  1. اصل مصنف کا لنک: دنیا کی کہانی میری زبانی

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*