رجب طیب اردوان سب سے مقبول مسلمان حکمران



سیاستدانوں کی مقبولیت سمیت دیگر سیاسی و سماجی مسائل پر سروے کرنے والے عالمی ادارے ’گیلپ انٹرنیشنل‘ کے ایک سروے کے مطابق ترکی کے صدر رجب طیب اردوان سب سے مقبول مسلمان حکمران ہیں۔
گیلپ سروے آف پاکستان اور گیلپ انٹرنیشنل کے مشترکہ سروے کے مطابق ترک صدر رجب طیب اردوان جہاں سب سے مقبول مسلمان حکمران ہیں، وہیں وہ دنیا کے بھی پانچویں مقبول رہنما ہیں۔
مذکورہ سروے نومبر سے دسمبر 2019 کے دوران پاکستان سمیت دنیا کے 50 ممالک میں کرایا گیا تھا اور اس دوران 50 ہزار سے زائد مرد و خواتین سے رائی لی گئی تھی۔
دنیا کے 50 ممالک سے تقریبا ہر ایک ملک سے ایک ہزار مرد و خواتین سے براہ راست یا آن لائن سروے کیا گیا تھا اور لوگوں سے عالمی حکمرانوں سے متعلق رائے لی گئی تھی۔

گیلپ سروے آف پاکستان کی جانب سے ترک صدر رجب طیب اردوان کے 13 سے 14 فروری تک کے 2 روزہ پاکستانی دورے پر جاری کی گئی سروے رپورٹ کے مطابق ترک صدر نے اسلامی حکمرانوں میں مقبولیت کے سب سے زیادہ نمبر یعنی 30 فیصد حاصل کیے۔
فہرست کے مطابق رجب طیب اردوان کے بعد دوسرے نمبر پر 25 فیصد نمبروں کے ساتھ سعودی عرب کے بادشاہ سلمان بن عبدالعزیز ہیں جب کہ تیسرے نمبر پر ایرانی صدر حسن روحانی ہیں جنہوں نے 21 فیصد نمبر حاصل کیے۔
دلچسپ بات یہ ہے کہ جہاں رجب طیب اردوان سب سے مقبول مسلمان حکمران ہیں، وہیں وہ جرمن چانسلر، فرانسیسی صدر، امریکی و روسی صدر کے بعد پانچویں نمبر پر مقبول رہنما ہیں۔
دنیا کے سب سے مقبول حکمران کا اعزاز جرمن چانسلر اینجلا مرکل کو حاصل ہوا جنہوں نے سب سے زیادہ یعنی 45 فیصد نمبر حاصل کیے۔
مقبولیت کے حوالے سے فرانسیسی صدر ایمانوئل میکخواں دوسرے، روسی صدر ولادی میر پیوٹن تیسرے، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ چوتھے ترک صدر رجب طیب اردوان پانچویں نمبر پر ہیں۔
عالمی سطح پر سب سے زیادہ مقبول 12 حکمرانوں میں بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی آٹھویں نمبر ہیں اور وہ عالمی سطح پر سعودی بادشاہ سلمان بن عبدالعزیز، ایرانی صدر، برازیلی صدر اور اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو سے آگے ہیں۔
مقبولیت کے حوالے سے چینی صدر ساتویں نمبر پر جب کہ برطانوی وزیر اعظم چھٹے نمبر پر رہے۔

کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.