.....................
Download WordPress Themes, Happy Birthday Wishes
HTV Pakistan
بنیادی صفحہ » خبریں » دلچسپ و حیرت انگیز » چھٹی کے روز بچوں کو جنم دینے سے پرہیز ضروری ہے!

چھٹی کے روز بچوں کو جنم دینے سے پرہیز ضروری ہے!

پڑھنے کا وقت: 2 منٹ

آج کی بدلتی اور تیزی سے ترقی کرتی دنیا میں خواتین کے پاس بچوں کی ڈیلیوری سے متعلق آپشنز بڑھتے جارہے ہیں، لیکن اب بھی ہسپتال سے بہتر اور محفوظ آپشن کوئی نہیں۔

ایک حالیہ تحقیق میں محققین نے اس بات کی جانب اشارہ کیا ہے کہ بچوں کی ڈیلیوری کے لیے گھر یا ہسپتال کے علاوہ دیگر مقام ڈیلیوری کے معاملے میں 3 گنا تک بیچیدگیوں کو بڑھا سکتے ہیں۔

محقیقین اس کی وجہ یہ بتاتے ہیں کہ ہسپتال وہ واحد مقام ہے جہاں بچوں کی محفوظ پیدائش کے حوالے سے صرف ماحول ہی سازگار نہیں ہوتا، بلکہ ماں اور بچوں کو لاحق ہر قسم کی مشکل سے نمٹنے کے لیے تمام ساز و سامان بھی موجود ہوتا ہے۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ آج کی تمام تر ترقی اور ہر قسم کی ادویات کی فراہم کے باوجود پیدائش کا پورا مرحلہ ماں اور بچے کے لیے اب بھی خطرناک ہے۔

خطرات کو کس طرح کم کیا جائے؟
اس تحقیق میں گزشتہ 23 کے اعداد و شمار کو شامل کیا گیا ہے، جن میں 3500 وہ مائیں ہیں جنہوں نے گھر میں یا ہسپتال کے علاوہ دیگر مقامات پر ڈیلیوری دی ہیں، جبکہ 2 لاکھ 40 ہزار وہ مائیں ہیں جنہوں نے ڈیلیوری کے لیے ہسپتال کا انتخاب کیا۔

اگرچہ بہت ساری خواتین نے ڈیلیوری کے لیے گھر کا انتخاب صرف اس لیے کیا کہ قدرتی اور پُرسکون ماحول میں یہ سارا کام ہوجائے گا، لیکن تحقیق کے بعد یہ بات ثابت ہوئی کہ ایسی خواتین کے لیے مشکلات بڑھی ہیں۔

محقیقین نے پوری تحقیق میں قومیت، عمر اور صحت سے ہٹ کر کام کیا، اور اس کے بعد یہی نتیجہ سامنے آیا کہ ہسپتال میں پیدائش کا سلسلہ ماں اور بچے کے لیے 3 گنا تک محفوظ ہے۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ اگر ہسپتال کی بات کی جائے تو ہر 1000 میں سے 5 بچوں کی جان کو خطرہ ہوتا ہے، لیکن اگر یہی موازنہ گھر یا ہسپتال کے علاوہ دیگر مقامات پر کیا جائے تو یہ خطرہ زیادہ بڑھ جاتا ہے اور ہر 1000 میں سے 15 بچوں کی جان کو خطرہ لاحق رہتا ہے۔

یہ بات ٹھیک ہے کہ ہمارے آباؤ اجداد کے دور میں گھر اور ہسپتال میں فرق کم ہی کیا جاتا تھا اور اس کی بڑی وجہ تعلیم اور معاملے سے متعلق معلومات میں کمی تھی، لیکن اب تو بہت تبدیلی آچکی ہے۔

محقق ڈاکٹر شائنر کہتی ہیں کہ ’اب جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے ماں اور بچے کی صحت، کسی بھی مشکل کی صورت میں فوری طور پر علاج اور آپریشن کے ذریعے پیدائش کی سہولت نے صورتحال کو بہت حد تک بہتر بنادیا ہے۔‘

جدید ترین ٹیکنالوجی اور ادویات سازی میں ترقی کے باوجود پیدائش سے متعلق ماں اور بچوں کو خطرات مکمل طور پر ختم نہیں ہوسکے ہیں۔ ایک اور حالیہ تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ ڈیلیوری سے متعلق مشکلات کا انحصار اس بات پر بھی ہے کہ بچے کی پیدائش کب اور کہاں ہورہی ہے؟

محقیقین نے پایا ہے کہ جو خواتین رات، ویک اینڈ یا چھٹی والے دن بچوں کو جنم دیتی ہیں ان کے معاملے میں پیچیدگیاں بڑھنے کا خدشہ زیادہ رہتا ہے۔

ایک ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ ’ہسپتال میں بھی خواتین کے لیے بچوں کو جنم دیتے وقت مشکلات پیدا ہوسکتی ہیں، اور اس کا تعلق ہسپتال، اس کے معیار اور وہاں دی جانے والی سہولیات سے ہوتا ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*