.....................
HTV Pakistan
بنیادی صفحہ » خبریں » دلچسپ و حیرت انگیز » ہوٹلوں میں پورن فلمیں بنانے والے ملزم گرفتار

ہوٹلوں میں پورن فلمیں بنانے والے ملزم گرفتار

پڑھنے کا وقت: 1 منٹ

جنوبی کوریا میں چار افراد کو ہوٹل کے کمروں میں 1600 مہمانوں کی خفیہ طور پر فلمیں بنا کر انھیں انٹرنیٹ پر بیچنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔

اس سلسلے میں ملزمان نے کمروں کے ٹی وی، ہیئر ڈرائر، اور دیوار پر ساکٹ جیسی جگہوں پر کیمرے نصب کر رکھے تھے۔ ملزمان نے مبینہ طور پر 6200 ڈالر کمائے۔

اگر انھیں سزا ہوئی تو ان کو 25000 ڈالر سے زیادہ جرمانہ اور 10 سال تک قید کی سزا ہو سکتی ہے۔

جنوبی کوریا میں خفیہ طور پر لوگوں کی فحش فلمیں بنانے کو ایک بڑا مسئلہ قرار دیا جا چکا ہے اور اس حوالے سے ملک میں مظاہرے بھی ہو چکے ہیں۔

اس تازہ ترین واقعے کے بارے میں بات کرتے ہوئے مقامی پولیس نے بتایا کہ ملزمان نے گذشتہ اگست میں ملک کے متعدد شہروں میں 30 مختلف ہوٹلوں ایک ملی میٹر لینز کے کیمرے نصب کیے تھے۔

اس کے بعد نومبر میں ایک ویب سائٹ بنائی گئی تھی جس میں صارفین 30 سیکنڈ کے کلپ مفت میں دیکھ سکتے تھے یا پھر فیس ادا کر کے مکمل ویڈئوز دیکھ سکتے تھے۔

اطلاعات کے مطابق ملزمان نے 803 ویڈیوز جاری کی تھیں اور قانون کی گرفت سے بچنے کے لیے انھوں نے ویب سائٹ کے سرور ملک سے باہر حاصل کیے تھے۔

حالیہ ماہ میں بند کی گئی اس ویب سائٹ کے 97 صارف تھے جنھوں نے فیس ادا کی تھی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*