.....................
HTV Pakistan
بنیادی صفحہ » شوبز » بڑی سکرین پر بھی ملک کا نام روشن کرنا چاہتی ہوں: آمنہ کفایت

بڑی سکرین پر بھی ملک کا نام روشن کرنا چاہتی ہوں: آمنہ کفایت

پڑھنے کا وقت: 3 منٹ

معروف ٹی وی آرٹسٹ کی ثاقب اسلم دہلوی سے گپ شپ
آمنہ کفایت ہماری ڈرامہ انڈسٹری میں ایک خوبصورت چہرے کا اضافہ ہے اور اس کے ساتھ اس بات کا جیتا جاگتا ثبوت بھی کہ ہمارے ہاں لائق لوگوں کو آج بھی میرٹ پر اپنی شناخت قائم کرنے کے مواقع ملتے ہیں۔ان لوگوں کی انڈسٹری میں آمد ان افواہوں کا بھی خاتمہ کردیتی ہے کہ یہاں صرف سفارش پر ہی کام ملتا ہے۔ گزشتہ دنوں ہم نے آمنہ کفایت سے ایک ملاقات کا اہتمام کیا جس میں ہونیوالی گفتگو ہم اپنے قارئین کی نذر کر رہے ہیں۔

سوال: سب سے پہلے آپ ہمیں یہ بتائیں کہ آپ کے فنی کریئر کی ابتداء کسیے ہوئی؟
آمنہ کفایت: میرے فنی کریئر کی ابتداء اچانک ہوئی۔ وہ اس طرح کہ میری ایک دوست میڈیا میں تھی، وہ مجھے اس شعبہ میں’ان‘ کرنا چاہتی تھی۔ میری ملاقات ’سٹرس‘ والوں سے ہوئی۔ انہوں نے مجھے دیکھا اور پھر میرٹ کی بنیاد پر مکمل سپورٹ کی۔ یوں میں شوبز فیلڈ میں آ گئی۔
سوال: آپ کو شوبز میں کتنا عرصہ ہو چکاہے؟
آمنہ کفایت: مجھے اس فیلڈ میں تقریباً تین سال سے ہو چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں! ماں کی دُعائیں ہر مقام پر کام آئیں: محسن عباس حیدر

سوال: آپ کے کتنے پروجیکٹ آن ائیر ہوچکے ہیں؟
آمنہ کفایت: اب تک میرے چار پروجیکٹ آن ائیر ہوچکے ہیں جب کہ دو آج کل آن ائیر ہیں۔ ان میں ایک ’’ہم اسی کے ہیں‘‘ ہے۔ اس کے علاوہ میں تین ڈراموں کی شوٹنگ میں مصروف ہوں۔
سوال: جب آپ نے شوبز میں آنے کا ارادہ ظاہر کیا تو آپ کے گھر والوں کا کیا رد عمل تھا؟
آمنہ کفایت: میرا تعلق آزاد کشمیر سے ہے۔ آج تک میرے خاندان والے مجھ سے ناراض ہیں۔ اس شعبے سے وابستہ ہونا تو دور کی بات جب ہم میں سے کوئی شوبز میڈیا کا نام گھر میں خصوصاً مما پاپا کے سامنے لیتا تو 99 فیصد تک ایک فلائنگ تھپڑ تو پڑ ہی جاتا تھا۔ مگر ایڈجسٹ کرنا پڑتا ہے کیونکہ منزل پانے کے لئے مسائل اور مشکلات کا سامنا تو کرنا ہی پڑتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں! سکرپٹ دیکھنے کے بعد کام کا فیصلہ کرتی ہوں: بینش راجہ

سوال: آپ شوبزفیلڈ کے بارے میں کیا کہنا چاہیں گی؟
آمنہ کفایت : شوبز ہم فنکاروں کی دوسری فیملی ہے ہم یہاں 12 گھنٹے سے زیادہ وقت گزارتے ہیں، اس لئے جب ساتھی فنکار اچھے ہوں تو پھر یہاں بالکل ہی فیلمی والا ماحول بن جاتا ہے جس میں کام کر کے نہ صرف مزا آتا ہے بلکہ خود کو مزید نکھارنے کا موقع بھی ملتا ہے۔
سوال: کیا آپ کو ماڈلنگ کا بھی شوق ہے؟
آمنہ کفایت: جی ہاں مجھے ماڈلنگ کا شوق ہے مگر۔۔۔۔ (ہنستے ہوئے) میرا قد چوٹا ہے۔
سوال: آپ کے خیال میں کیا ہر کوئی اداکار بن سکتا ہے؟
آمنہ کفایت: (ہنستے ہوئے)۔۔۔ اگر سب اداکار بن جائیں گے تو ڈاکٹر، ہدایت کار اور بزنس مین کون بنے گا۔ اللہ نے سب کو منفرد صلاحیتیوں سے نوازا ہوتا ہے، اس لئے ان سے مختلف کام لیا جاتا ہے۔

سوال: آپ اپنی نجی زندگی کے بارے بھی ہمارے قارئین کو کچھ بتائیں؟
آمنہ کفایت: میری ایک بیٹی ہے جس کی عمر پانچ سال ہے۔ میری شادی کم عمر میں ہی ہوگئی تھی اور پھر مجھے طلاق ہوگئی مگر میں نے خود کو کمزور نہیں کیا۔ میں اپنی بیٹی کی اچھی پرورش کر رہی ہوں، اس کو اچھی تعلیم دلا رہی ہوں۔ اس کے ساتھ ساتھ شوبز بھی میرے حصے میں آگیا تو اس میں بھی محنت کر رہی ہوں۔
سوال: کیا آپ کو فلموں میں کام کرنے کا بھی شوق ہے؟
آمنہ کفایت: جی ہے۔ سلور اسکرین پر کام کرنا تو ہر چھوٹے بڑے فنکار کی خواہش ہوتی ہے، اس لئے میری بھی ہے۔ میں بھی چاہتی ہوں کہ میں بڑی سکرین کے ذریعے بھی اپنے ملک کا نام روشن کروں۔

یہ بھی پڑھیں! بناوٹی لوگوں سے میل جول نہیں رکھتی: حاجرہ خان

سوال: بیٹی کی پرورش بھی اور ساتھ اتنا زیادہ کام بھی۔۔۔ آپ ان دونوں ذمہ داریوں میں توازن کیسے رکھتی ہیں؟
آمنہ کفایت: دیکھیں جی! میں تو پھر وہی بات کہوں گی کہ جب زندگی میں آپ کچھ کرنا چاہتے ہیں تو آپ کو مینج کرنا پڑتا ہے۔ وقت کی تقسیم اچھے طریقے سے کر لی جائے تو کچھ بھی ناممکن نہیں رہتا۔
سوال: آپ اپنے پرستاروں کے لئے کیا پیغام دیں گی؟
آمنہ کفایت: میں اپنے پرستاوں کی بہت زیادہ قدر کرتی ہوں۔ میری کوشش ہوتی ہے کہ میں اپنے چاہنے والوں سے سوشل میڈیا کے ذریعے رابطے میں رہوں کیونکہ ایک فنکار کے لئے سب سے بڑا ایوارڈ اس کے پرستار ہی ہوتے ہیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*