HTV Pakistan

افسانہ

تعاون …… سعادت حسن منٹو

سعادت حسن منٹو ……. چالیس پچاس لٹھ بند آدمیوں کا ایک گروہ لوٹ مار کیلئے ایک مکان کی طرف بڑھ رہا تھا۔ دفعتاً اس بھیڑ کو چیر کر ایک دبلا پتلا ادھیڑ عمر کا آدمی باہر نکلا۔ پلٹ کر اس نے بلوائیوں کو لیڈرانہ انداز میں مخاطب کیا۔ “بھائیو، اس مکان میں بے اندازہ دولت ہے، بے شمار قیمتی سامان ...

مزید پڑھیں »

آپا ………. ممتاز مفتی

جب کبھی بیٹھے بٹھائے، مجھے آپا یاد آتی ہے تو میری آنکھوں کے آگے چھوٹا سا بلوری دیا آ جاتا ہے جو نیم لو سے جل رہا ہو۔ مجھے یاد ہے کہ ایک رات ہم سب چپ چاپ باورچی خانے میں بیٹھے تھے۔ میں، آپا اور امی جان، کہ چھوٹا بدو بھاگتا ہوا آیا۔ ان دنوں بدو چھ سات سال ...

مزید پڑھیں »

آخری آدمی …….. انتظار حسین

الیاس اس قریے میں آخری آدمی تھا۔ اس نے عہد کیا تھا کہ معبود کی سوگند میں آدمی کی جون میں پیدا ہوا ہوں اور میں آدمی ہی کی جون میں مروں گا۔ اور اس نے آدمی کی جون میں رہنے کی آخر دم تک کوشش کی۔ اور اس قریے سے تین دن پہلے بندر غائب ہو گئے تھے۔ لوگ ...

مزید پڑھیں »

حوّا کی بیٹی: ایسی قیامت ٹوٹی کہ جنت نظیر گھر دوزخ بن گیا

ہمایوں شاہین ….. آج پھر وہی شور شرابا، وہی ہنگامہ اور لرزہ خیز چیخیں اور دل آزاد گالیاں لیکن یہ اب روز کا معمول بن چکا تھا …. جو کوئی بھی یہ چیخیں سنتا تھا تو حیران وپریشان انگشت بدنداں کھڑا ہوتا اور دل ہی دل میں کہتا کہ اس نگر پر کون سی ایسی قیامت ٹوٹ پڑی ہے کہ ...

مزید پڑھیں »

رومی کی تلاش

‘جب میں مر جاؤں، تو میرا مزار زمین پر نہیں، بلکہ لوگوں کے دلوں میں ڈھونڈنا۔’ یہ مولانا جلال الدین رومی (1273-1207) کی قبر کے کتبے پر لکھی ہوئی عبارت ہے؛ ایک ایسی پیشنگوئی، جو 13 ویں صدی سے اب تک درست ثابت ہوتی رہی ہے۔ مولانا رومی کی شاعری ان کی وفات کے سات صدیوں بعد بھی مختلف ممالک ...

مزید پڑھیں »

مناسب کارروائی

جب حملہ ہوا تو محلے میں سے اقلیت کے کچھ آدمی تو قتل ہو گئے، جو باقی تھے جانیں بچا کر بھاگ نکلے۔ ایک آدمی اور اس کی بیوی البتہ اپنے گھر کے تہہ خانے میں چھپ گئے۔ دو دن اور دو راتیں پناہ یافتہ میاں بیوی نے قاتلوں کی متوقع آمد میں گزار دیں، مگر کوئی نہ آیا۔ دو ...

مزید پڑھیں »

بے خبری کا فائدہ

سعادت حسن منٹو لبلبی دبی ۔۔۔۔ پستول سے جھنجھلا کر گولی باہر نکلی۔ کھڑی میں سے باہر جھانکنے والا آدمی اسی جگہ دوہرا ہو گیا۔ لبلبی تھوڑی دیر کے بعد پھر دبی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ دوسری گولی بھنبھناتی ہوئی باہر نکلی۔ سڑک پر ماشکی کی مشک پھٹی۔ اوندھے منہ گرا اور اس کا لہو مشک کے پانی میں حل ہو کر بہنے ...

مزید پڑھیں »

جائز استعمال …… سعادت حسن منٹو

سعادت حسن منٹو …… دس راؤنڈ چلانے اور تین آدمیوں کو زخمی کرنے کے بعد پٹھان آخر سرخ رو ہو ہی گیا۔ ایک افراتفری مچی تھی۔ لوگ ایک دوسرے پر گر رہے تھے، چھینا جھپٹی ہو رہی تھی، مار دھاڑ بھی جاری تھی۔ پٹھان اپنی بندوق لئے گھسا اور تقریباً ایک گھنٹہ کشتی لڑنے کے بعد تھرموس بوتل پر ہاتھ ...

مزید پڑھیں »

تقسیم …….. سعادت حسن منٹو

سعادت حسن منٹو ایک آدمی نے اپنے لیے لکڑی کا ایک بڑا صندوق منتخب کیا جب اسے اٹھانے لگا تو وہ اپنی جگہ سے ایک انچ بھی نہ ہلا۔ ایک شخص نے جسے شاید اپنے مطلب کی کوئی چیز مل ہی نہیں رہی تھی، صندوق اٹھانے کی کوشش کرنے والے سے کہا۔ “میں تمھاری مدد کروں؟” صندوق اٹھانے کی کوشش ...

مزید پڑھیں »

مزدوری …… سعادت حسن منٹو

سعادت حسن منٹو ……. لوٹ کھسوٹ کا بازار گرم تھا، اس گرمی میں اضافہ ہو گیا جب چاروں طرف آگ بھڑکنے لگی۔ ایک آدمی ہارمونیم کی پیٹی اٹھائے خوش خوش گاتا جا رہا تھا۔ “جب تم ہی گئے پردیس لگا کر ٹھیس او پیتم پیارا، دنیا میں کون ہمارا۔” ایک چھوٹی عمر کا لڑکا جھولی میں پاپڑوں کا انبار ڈالے ...

مزید پڑھیں »